مرکزی صفحہ » admin (صفحہ 5)

admin

معزالدین کیقباد

از منتخب التواریخ سلطان بلبن نے خسرو خان کو اپنا ولی عہد مقرر کیا تھا لیکن ایک امیر ملک جسے ایتمر بھی کہتے تھے کچھ اور امراء کے ساتھ مل کر (جو خسرو خاں کے باپ شہید کے مخالف تھے)خسرو کے بجائے بغراخاںکے لڑکے معزالدین کیقباد کو تخت پر بیٹھا دیا۔ اس وقت کیقباد کی عمر صرف 18 سال کی …

مزید پڑھیں

غیاث الدین بلبن خورد

از منتخب التواریخ الغ خانی خطاب تھا 664 ھ/ 1265ء میں تمام امراء اور ملوک کی رائے سے قیصر سفید میں اس نے تخت سلطنت کو زینت بخشی۔ یہ سلطان التمش کے ان چالیس غلاموں میں سے تھا جن میںسے ہر ایک منصب امارت پر فائز ہوا۔جب کہ وہ ابھی الغ خاں تھا اور مملکت کی باگ ڈور اس کے …

مزید پڑھیں

ناصر الدین محمود بن شمس الدین التمش

از منتخب التواریخ 644 ھ/ 1246ء میں تخت سلطنت پر جلوہ افروز ہوا۔ اس نے چھوٹے غیاث الدین جو غیاث الدین خورد کے نام سے مشہور تھا، کو اپنا وزیر بنایا جو وہ اس کے والد کا غلام اور داماد تھا۔ تخت نشینی کے وقت بے شمار تحفے سلطان ناصرالدین کی خدمت میں پیش کیے گیے اور شاعروں نے ان …

مزید پڑھیں

خسرو ملک ابن خسروشاہ

از منتخب التواریخ خسرو شاہ کے انتقال کے بعد خسرو ملک لاہور کے تخت پر بیٹھا۔ وہ اعلی درجہ کا عیاش تھا اس لیے اس کے عہد حکومت میں ہرطرف ابتری پھیل گئی۔ غزنوی حکومت جو پہلے کمزور ہو چکی تھی، خسرو ملک اس کی مردہ لاش کو بس دّرے مار مار کر گھسیٹتا رہا۔ غوری خاندان کا ستارہ عروج …

مزید پڑھیں

سلطان بہرام شاہ مسعود بن ابراہیم

از منتخب التواریخ سلطان بہرام شاہ جب تخت پر بیٹھا تو حکیم سنائی اس کا مداح تھا۔ کلیلہ ودمنہ اور بہت سی دوسری کتابیں اس کے عہد حکومت میں احاطۂ تحریر میں آئیں۔ اس کی تخت نشینی کے روز سید حسن غزنوی نے جو قصیدہ کہا تھا اس کا مطلع ہے: ندائی بر آمد زہفت آسمان کہ بہرام شاہ است …

مزید پڑھیں

ارسلان شاہ بن مسعود بن ابراہیم بن سلطان مسعود

از منتخب التواریخ تخت نشین ہوتے ہی اس نے اپنے تمام بھائیوں کو گرفتار کرلیا، مگر بہرام شاہ بھاگ کر سلطان سنجر کے پاس چلا گیا جو اس کا خالہ زاد بھائی تھا۔ سلطان سنجر نے ہرچند سفارشی خطوط لکھے مگر ارسلان شاہ کے کان پر جوں تک نہ رینگی جس کا نتیجہ یہ ہوا کہ سلطان سنجر نے مجبور …

مزید پڑھیں

ناصر الدین سبکتگین

از منتخب التواریخ غزنی کے راستے ہی میں جب ماہ شعبان 387ھ 998/ء میں سبکتگین نے داعی حق کو لبیک کہا۔ اس سے قبل سبکتگین اپنے فرزند اسمٰعیل کو اپنا ولی عہد مقرر کرچکا تھا۔ جب اس بات کی خبرمحمود کو ملی تو انھوں نے اپنے چھوٹے بھائی کو تعزیتی خط لکھا جس میں بطور مصالحت یہ تجویز بھی پیش …

مزید پڑھیں

ابراہیم بن مسعود بن محمود غزنوی

از منتخب التواریخ وہ ایک عادل، زاہد اور متقی بادشاہ تھا۔ ہر سال اپنے ہاتھ سے قرآن مجید لکھ کر مکہ معظمہ بھیجا کرتا۔ اس نے اپنے لیے کوئی محل سرا تعمیر نہیں کرایاتھا، سوائے ایک مسجد اور مدرسہ کے اور وہ بھی خدا کے لیے تھا۔ جب اُمور سلطنت کی ذمہ داری اس کے کندھوں پر پڑی تو اس …

مزید پڑھیں

سلطان فرخ زادبن مسعود بن محمود غزنوی

سلطان فرخ قید خانے سے رہائی کے بعد امراء کی رائے سے تخت نشین ہوا۔ جب سلجوقیوں کی ایک جماعت نے غزنی پر چڑھائی کی تو اس نے ان کی ایک کثیر تعداد کو قتل کرادیااور آخر ان پر غلبہ پالیا۔ جو سلجوقی گرفتار ہوئے انھیں غزنی بھجوا دیا۔ الپ ارسلان سلجوقی بادشاہ عراق اور خراسان سے فوج کشی کر …

مزید پڑھیں

سلطان عبدالرشید ابن محمود غزنوی

سلطان عبدالرشیدنے تخت نشین ہوتے ہی عبدالرزاق کے مشورے سے غزنی کا رخ کیا۔ علی ابن مسعود بغیر جنگ کیے بھاگ گیا اور طغرل حاجب جو سلطان محمود کا خانہ زاد غلام تھا سیستان فتح کرنے کے بعد غزنی کی جانب بڑھا۔ سلطان عبدالرشید نے ڈٹ کر مقابلہ کیا مگر 445ھ 1053/ء میں طغرل حاجب نے موقعہ پا کر اسے …

مزید پڑھیں